125

اس نوجوان سکھ نے آصفہ کے اہل خانہ کیلئے ایسا کام کرنے کا اعلان کر دیا کہ انتہا پسند ہندوﺅں کو پوری دنیا میں منہ دکھانے کے لائق نہ چھوڑا





مقبوضہ کشمیر میں ننھی آصفہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر دیا گیا اور اس واقعے نے پوری انسانیت کے رونگٹے کھڑ کر دیئے ہیں تاہم اب بالی ووڈ سمیت ہر جانب سے ان کے قاتلوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کیلئے آواز بلندہو چکی ہے اور بھارتی سپریم کورٹ نے بھی اس کا نوٹس لے لیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق آصفہ کو انصاف دلانے کیلئے مقبوضہ کشمیر میں درد دل رکھنے والا ہر شخص ننھی پری کو انصاف دلانے کیلئے اپنی اپنی کوشش کر رہاہے اور اسی صورتحال کے پیش نظر مقبوضہ کشمیر کے رہائشی اس سکھ نے اپنی ایک مہینے کی تنخواہ متاثرہ خاندان کو قانونی کارروائی میں مدد کرنے کیلئے وقف کر نے کا اعلان کر دیاہے ۔ اس نوجوان کا کہناتھا کہ میں سمجھتاہوں کہ اس مصیبت کے وقت میں آصفہ کے اہل خانہ کی مدد کرنا ہماری ذمہ داری ہے اور اس کہنا تھا کہ اسے خوشی ہے کہ وہ ان کیلئے کچھ کر سکاہے ۔ان کا کہناتھا کہ خواتین کو عزت دی جانی چاہیے اور آصفہ میری بیٹی جیسی تھی اور جب مجھے یہ واقع معلوم ہوا تو میرا دل تکلیف میں مبتلا ہو گیا ۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اس نوجوان سکھ نے آصفہ کے اہل خانہ کیلئے ایسا کام کرنے کا اعلان کر دیا کہ انتہا پسند ہندوﺅں کو پوری دنیا میں منہ دکھانے کے لائق نہ چھوڑا” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں